X

فیکٹ چیک: مدینہ منورہ میں سجدے کے دوران نہیں ہوا تھا اس شخص کا انتقال، بےہوش ہوئے شخص کی تصویر فرضی دعوی کے ساتھ وائرل

وشواس نیوز نے وائرل پوسٹ کی پڑتال میں پایا کہ یہ دعوی فرضی ہے۔ شیئر کی جا رہی تصویر میں نظر آرہا شخص محض بےہوش ہوا تھا۔ وائرل دعوی کی تردید سعودی ریڈ کریسنٹ اتھارٹی نے بھی کی ہے۔

  • By Vishvas News
  • Updated: June 5, 2022

نئی دہلی (وشواس نیوز)۔ سوشل میڈیا پر ایک تصویر وائرل ہو رہی ہے جس میں ایک شخص کو مدینہ منورہ میں سجدے میں دیکھا جا سکتا ہے۔ اس کے ارگ گرد گاڑڈس اور کچھ لوگ بھی کھڑے نظر آرہے ہیں۔ تصویر کو شیئر کرتے ہوئے صارفین یہ دعوی کر رہے ہیں کہ یہ مدینہ منورہ میں اس شخص کا سجدے کے دوران انتقال ہو گیا۔ جب ہم نے اس پوسٹ کی پڑتال کی تو پایا کہ یہ دعوی فرضی ہے۔ وہ شخص محض بےہوش ہوا تھا۔ وائرل دعوی کی تردید سعودی ریڈ کریسنٹ اتھارٹی نے بھی کی ہے۔

کیا ہے وائرل پوسٹ میں؟

فیس بک صارف نے وائرل تصویر کو شیئر کرتے ہوئے لکھا، ’آج مدینہ منورہ میں نماز جمعہ کے دوران ایک شخص سجدے کی حالت میں فوت ہوا قابل رشک موت‘۔

پوسٹ کے آرکائیو ورژن کو یہاں دیکھیں۔

پڑتال

اپنی پڑتال کو شروع کرتے ہوئے سب سے پہلے ہم نے گوگل رورس امیج کے ذریعہ وائرل تصویر کو سرچ کیا۔ سرچ میں ہمیں اسی معاملہ سے متعلق خبر المدینہ ڈاٹ کام کی ویب سائٹ پر اپلوڈ ہوئی ملی۔ 19 مارچ 2022 کی خبر کے مطابق، ’ہلال احمر نے تصدیق کی کہ مسجد نبوی میں تعینات ایمبولینس اسکواڈ نے کل ، جمعہ کو ایک شخص کو نماز جمعہ کے دوران بیہوش پایا تھا اور اسے فورا اسپتال میں منتقل کروایا گیا۔ المدینہ المنورہ میں سعودی ہلال احمر اتھارٹی برانچ کے سرکاری ترجمان خالد السحلی نے بتایا کہ نماز جمعہ کے وقت وہ شخص بےہوش ہو گیا تھا حالاںکہ ان کے انتقال سے متعلق خبریں فرضی ہیں۔ مکمل خبر یہاں پڑھی جا سکتی ہے۔

ہمیں اسی معاملہ سے متعلق خبر سعودی ایکپاٹریئٹس اور عرب لوکل ڈاٹ کام کی ویب سائٹ پر بھی ملی۔ ان خبروں میں بھی وائرل تصویر نظر آئی اور دی گئی معلومات کے مطابق وہ شخص محض بے ہوش ہوا تھا۔

مزید سرچ میں ہمیں ہلال احمر اتھارٹی کے ترجمان خالد السهلي کا ٹویٹ بھی ملا۔ ٹویٹ میں دی گئی واضحت کے مطابق نماز جمعہ کے دوران وہ شخص بےہوش ہوا تھا۔ مکمل ٹویٹ یہاں دیکھیں۔

مزید تصدیق حاصل کرنے کے لئے ہم نے سعودی عرب کے صحافی سعد الحربی سے رابطہ کیا اور وائرل پوسٹ ان کے ساتھ شیئر کی۔ انہوں نے تصدیق دیتے ہوئے بتایا کہ، ’یہ دعوی غلط ہے۔ وہ شخص صرف بےہوش ہوا تھا اور اس کو اسپتال میں داخل کرانے کے بعد اس کی حالت بھی بہتر ہو گئی تھی‘۔

فرضی پوسٹ کو شیئر کرنے والے فیس بک صارف کی سوشل اسکیننگ میں ہم نے پایا کہ صارف کو 2357 لوگ فالوو کرتے ہیں۔

نتیجہ: وشواس نیوز نے وائرل پوسٹ کی پڑتال میں پایا کہ یہ دعوی فرضی ہے۔ شیئر کی جا رہی تصویر میں نظر آرہا شخص محض بےہوش ہوا تھا۔ وائرل دعوی کی تردید سعودی ریڈ کریسنٹ اتھارٹی نے بھی کی ہے۔

  • Claim Review : آج مدینہ منورہ میں نماز جمعہ کے دوران ایک شخص سجدے کی حالت میں فوت ہوا قابل رشک موت
  • Claimed By : Hafiz Kashif Mahmood
  • Fact Check : گمراہ کن
گمراہ کن
فرضی خبروں کی نوعیت کو بتانے والے علامت
  • سچ
  • گمراہ کن
  • جھوٹ‎

مکمل حقیقت جانیں... کسی معلومات یا افواہ پر شک ہو تو ہمیں بتائیں

سب کو بتائیں، سچ جاننا آپ کا حق ہے۔ اگر آپ کو ایسے کسی بھی میسج یا افواہ پر شبہ ہے جس کا اثر معاشرے، ملک یا آپ پر ہو سکتا ہے تو ہمیں بتائیں۔ آپ نیچے دئے گئے کسی بھی ذرائع ابلاغ کے ذریعہ معلومات بھیج سکتے ہیں۔

ٹیگز

اپنی راے دیں
مزید پڑھ

No more pages to load

متعلقہ مضامین

Next pageNext pageNext page

Post saved! You can read it later