X

فیکٹ چیک: بیف فلیور لکھا ہوا میگی کا پیکٹ آسٹریلیا کا ہے، اسے ہندوستان میں نہیں کیا جاتا ہے فروخت

  • By Vishvas News
  • Updated: March 17, 2020

نئی دہلی (وشواس نیوز)۔ سوشل میڈیا پر آج کل نیسلے کمپنی کے میگی نوڈلس کو لے کر ایک پوسٹ وائرل ہو رہی ہے۔ اس وائرل پوسٹ میں میگی کے بیف فلیور والے پیکٹ کو دیکھا جا سکتا ہے۔ اس پوسٹ میں یہ دکھانے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ اس بیف فلیور والی میگی کو ہندوستان میں فروخت کیا جا رہا ہے اور کہا جا رہا کہ ایسی کمپنی کا بائیکاٹ کرنا چاہئے۔ وشواس نیوز کی پڑتال میں پتہ چلا کہ جو بیف فلیور والی میگی کا پیکٹ وائرل کیا جا رہا ہے وہ ہندوستان کا نہیں، بلکہ آسٹریلیا کا ہے۔ ہندوستان میں کہیں بھی بیف فلیور کی میگی نہیں بیچی جا رہی ہے۔

کیا ہے وائرل پوسٹ میں؟

فیس بک کچھ پیج ’میں گو پتر ہوں‘ نے میگی کی فوٹو شیئر کرتے ہوئے لکھا، ’’میگی میں بیف فلیور ڈالنا شروع کر دیا ہے۔ میں آج سے میگی کا بائیکاٹ کرتا ہوں، آپ جو بھی گائے کو ماتا کا درجہ دیتے ہیں میگی کا بائیکاٹ کریں‘‘۔

پڑتال

ہم نے کمپنی کی ویب سائٹ پر میگی کے تمام فلیورس کی جانچ کی اور پایا کہ نیسلے ہندوستان میں بیف فلیور والی میگی نہیں بیچتی ہے۔ ہندوستان میں میگی کی ویب سائٹ پر نان ویج سیکشن میں صرف چکن فلیورس والے نوڈلس اور کپ نولڈلس ہیں۔

ہم نے کئی اور ہندوستان آن لائن گروسری ویب سائٹوں پر بھی بیف فلیور میگی تلاش کرنے کی کوشش کی مگر ہمیں کہیں بھی یہ نہیں ملی۔

جب ہم نے وائرل میگی کی تصویر کا اسکرین شاٹ لے کر اسے گوگل رورس امیج سرچ کیا تو ہم نے پایا کہ بیف کے فلیور والی میگی نوڈلس کے میگی آسٹریلیا ویب سائٹ میں موجود تھی۔ اس ویب سائٹ پر بائے خریدنے کا بھی آپشن تھا حالاںکہ جب ہم نے اس مصنوعات کو خریدنے کی کوشش کی تو یہ پیج ایرر دکھانے لگا۔

ہمیں اس موضوع میں نیسلے انڈیا کا 12 مارچ 2020 کو کیا گیا ایک ٹویٹ کا رپلائی ملا جس میں لکھا تھا
“Hi, we would like to inform you that MAGGI noodles manufactured and sold by Nestlé India does not contain beef or any form of beef flavor.”
اردو ترجمہ: ہم آپ کو یہ بتانا چاہتے ہیں کہ نیسلے انڈیا کےذریعہ تیار کردہ اور بیچے جانے والی میگی نوڈلس میں بیف یا بیف فلیور کا کوئی بھی شکل شامل نہیں ہے‘‘۔

وشواس نیوز نے اس موضوع میں نیسلے انڈیا کے ترجمان سے بات کی۔ انہوں نے ہمیں بتایا، ’نیسلے انڈیا کے ذریعہ بیچے جانے والے میگی نوڈلس میں بیف نہیں ہے‘‘۔

اب باری تھی اس پوسٹ کو گمراہ کن حوالے کے ساتھ شیئر کرنے والے فیس بک پیج ’میں گو پتر ہوں‘ کی سوشل اسکیننگ کرنے کی۔ ہم نے پایا کہ اس پیج کو813,986 صارفین فالوو کرتے ہیں۔

نتیجہ: وشواس نیوز کی پڑتال میں پتہ چلا کہ بیف فلیور والی میگی کا پیکٹ وائرل کیا جا رہا ہے وہ ہندوستان کا نہیں، بلکہ آسٹریلیا کا ہے۔ ہندوستان میں کہیں بھی بیف فلیور میگی نہیں بیچی جا رہی ہے۔ وائرل فوٹو میں نظر آرہی مصنوعات غیر ملک میں فروخت کیا جاتا ہے اور کسی نے وہاں کی سائٹ سے اسے ٹھا کر ہندوستان میں سوشل میڈیا پر اسے وائرل کر دیا ہے جو ہندوستان کے حوالے میں مکمل طور پر فرضی ہے۔

  • Claim Review : دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ میگی میں بیف فلیور ڈالنا شروع کر دیا ہے۔ میں آج سے میگی کا بائیکاٹ کرتا ہوں، آپ جو بھی گائے کو ماتا کا درجہ دیتے ہیں میگی کا بائیکاٹ کریں
  • Claimed By : FB Page- मैं गौपुत्र हूँ
  • Fact Check : گمراہ کن
گمراہ کن
    فرضی خبروں کی نوعیت کو بتانے والے علامت
  • سچ
  • گمراہ کن
  • جھوٹ‎

مکمل حقیقت جانیں... کسی معلومات یا افواہ پر شک ہو تو ہمیں بتائیں

سب کو بتائیں، سچ جاننا آپ کا حق ہے۔ اگر آپ کو ایسے کسی بھی میسج یا افواہ پر شبہ ہے جس کا اثر معاشرے، ملک یا آپ پر ہو سکتا ہے تو ہمیں بتائیں۔ آپ نیچے دئے گئے کسی بھی ذرائع ابلاغ کے ذریعہ معلومات بھیج سکتے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Post saved! You can read it later