X

فیکٹ چیک: ایودھیا پولیس کی ماک ڈرل کے ویڈیو کو دہشت گردوں سے جوڑ کر کیا جا رہا وائرل

  • By Vishvas News
  • Updated: June 8, 2020

نئی دہلی (وشواس نیوز)۔ سوشل میڈیا میں ایک ویڈیو کو وائرل کرتے ہوئے کچھ لوگ یہ جھوٹ پھیلا رہے ہیں کہ ایودھیا میں دو دہشت گرد پکڑے گئے ہیں۔ وائرل ویڈیو میں پولیس کو کچھ لوگوں کو پکڑے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ واشواس نیوز نے جب وائرل ویڈیو کی جانچ کی تو پتہ چلا کہ وائرل ویڈیو دراصل ایک ماک ڈرل کا ہے، جو کہ 29 مئی کو ایودھیا کی سکیورٹی کی اصلیت جاننے کے لئے اشرفی بھون چوراہے پر ہوئی تھی۔ وشواس نیوز کی جانچ میں وائرل پوسٹ فرضی نکلی۔

کیا ہے وائرل پوسٹ میں؟

فیس بک پیج ’شیئر ہندو استھان‘ نے ایک ویڈیو کو اپ لوڈ کیا اور دعوی کرتے ہوئے لکھا: ’’ایودھیا میں اشرفی بھون کے پاس دو دہشت گردوں کو بم کے ساتھ پولیس نے کیا گرفتار‘‘۔

پڑتال

وشواس نیوز نے پہلے وائرل ویڈیو کی تفتیش شروع کی۔ ویڈیو کو غور سے دیکھتے ہوئے ، ہمیں دو چیزیں سمجھ میں آئیں۔ پہلی یہ کہ ویڈیو حالیہ ہے ، کیونکہ ویڈیو میں نظر آنے والے پولیس اہلکار ماسک پہنے ہوئے ہیں۔ دوسری یہ کہ، ہم نے دیکھا کہ بیرکیڈ پر ایودھیا پولیس انگریزی لکھا تھا۔

ہم نے انویڈ ٹول سے تحقیقات کا آغاز کیا۔ پہلے ، 30 سیکنڈ کا ویڈیو اپلوڈ کریں جو وائرل ہو رہا ہے ، انویڈ ٹول میں اور متعدد اسکرین شاٹس نکالیں۔ اس کے بعد ، انہیں گوگل کے رورس امیج میں تلاش کیا۔ آخر کار ، ہمیں یوٹیوب پر ایک ویڈیو ملا۔ 29 مئی کو مقامی اخبار کے یوٹیوب چینل پر اپ لوڈ کی گئی ویڈیو کے کیپشن میں بتایا گیا ہے کہ ایودھیا پولیس نے ماک ڈرل کی تھی۔ 3 منٹ سے زیادہ کی اس ویڈیو میں ، ہمیں وہی شخص، گاڑیاں اور لوکیشن دکھے جیسے وائرل ویڈیو میں دیکھا گیا ہے۔

اس کے بعد ، ہم نے گوگل میں مختلف کی ورڈ ٹائپ کرکے ماک ڈرل کی خبروں کی تلاش شروع کردی۔ ہمیں متعدد نیوز ویب سائٹوں پر ایودھیا میں حالیہ ہوئی ماک ڈرل کی خبر شائع ہوئی ملی۔ ایک مقامی ویب سائٹ کی خبر کے مطابق ، 29 مئی کو اشرفی بھون چوراہے کے قریب پولیس کا ایک ماک ڈرل ہوئی۔ یہ ایودھیا کے حفاظتی نظام کی حقیقت کو جاننے کے لئے کیا گیا تھا۔

تفتیش کے دوران ہم نے ایودھیا کے، دینک جاگرن کے ایک سینئر صحافی رما شرن اووستھی سے رابطہ کیا۔ انہوں نے وشواس نیوز کو بتایا کہ وائرل پوسٹ فرضی ہے۔ یہ محض ایک ماک ڈرل تھی۔

تفتیش کے اگلے مرحلے میں ، ہم نے ایودھیا کے سٹی ایس پی وجئے پال سنگھ سے رابطہ کیا۔ انہوں نے وشواس نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ وائرل ویڈیو کے ساتھ جو دعوی کیا جارہا ہے وہ فرضی ہے۔ 29 مئی کو ، ہم نے ایودھیا کوتوالی پولیس اسٹیشن کے علاقے میں ایک ماک ڈرل کی تھی۔ ویڈیو اسی کا ہے۔

اب باری تھی اس پوسٹ کو فرضی دعوی کے ساتھ وائرل کرنے والے فیس بک پیج ’شیئر ہندو استھان‘ کی سوشل اسکیننگ کرنے کی۔ ہم نے پایا کہ اس پیج سے ایک مخصوص آئیڈولاجی کی جانب متوجہ پوسٹ کو شیئرکیا جاتا ہے


نتیجہ: وشواس نیوز کی تفتیش میں ایودھیا میں دو دہشت گردوں کی گرفتاری والی پوسٹ نکلی۔ 29 مئی کو ایودھیا کے اشرفی بھون چوراہے کے پاس کے ایک ماک ڈرل ہوئی تھی۔ کچھ لوگوں نے اسی ماک ڈرل کے ویڈیو کو غلط دعوی کے ساتھ وائرل کر دیا۔

  • Claim Review : ایودھیا میں اشرفی بھون کے پاس دو دہشت گردوں کو بم کے ساتھ پولیس نے کیا گرفتار
  • Claimed By : FB User- Share हिन्दू-स्थान
  • Fact Check : جھوٹ‎
جھوٹ‎
    فرضی خبروں کی نوعیت کو بتانے والے علامت
  • سچ
  • گمراہ کن
  • جھوٹ‎

مکمل حقیقت جانیں... کسی معلومات یا افواہ پر شک ہو تو ہمیں بتائیں

سب کو بتائیں، سچ جاننا آپ کا حق ہے۔ اگر آپ کو ایسے کسی بھی میسج یا افواہ پر شبہ ہے جس کا اثر معاشرے، ملک یا آپ پر ہو سکتا ہے تو ہمیں بتائیں۔ آپ نیچے دئے گئے کسی بھی ذرائع ابلاغ کے ذریعہ معلومات بھیج سکتے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ مضامین

Post saved! You can read it later