X

فیکٹ چیک: اصل تصویر میں راہل گاندھی کے ساتھ کنہیا لال کا ملزم نہیں ہے بلکہ ہاردک پٹیل ہیں

وشواس نیوز کی جانچ میں وائرل دعویٰ جھوٹا نکلا۔ وائرل تصویر کو پروپیگنڈے کی نیت سے ایڈٹ کرکے شیئر کیا جارہا ہے۔ اصل تصویر میں ہاردک پٹیل راہل گاندھی کے ساتھ کھڑے ہیں۔

  • By Vishvas News
  • Updated: July 9, 2022

نئی دہلی (وشواس نیوز)۔ راہل گاندھی کی ایک تصویر سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہو رہی ہے۔ تصویر میں راہل گاندھی ایک شخص کے ساتھ کھڑے نظر آ رہے ہیں۔ تصویر شیئر کر کے صارفین دعویٰ کررہے ہیں کہ راہل گاندھی ٹیلر کنہیا لال کے قاتل کا ہاتھ پکڑے کھڑے ہیں۔

وشواس نیوز کی جانچ میں وائرل دعویٰ جھوٹا نکلا۔ وائرل تصویر کو پروپیگنڈے کی نیت سے ایڈٹ کرکے شیئر کیا جارہا ہے۔ اصل تصویر میں ہاردک پٹیل راہل گاندھی کے ساتھ کھڑے ہیں۔

کیا ہے وائرل پوسٹ میں؟

وائرل تصویر کو شیئر کرتے ہوئے فیس بک صارف لولال یادو نے لکھا کہ ’اصل بات یہ ہے کہ کچھ سمجھ لو‘۔

پوسٹ کا آرکائیو لنک یہاں پایا جا سکتا ہے۔

پڑتال

وائرل تصویر کی حقیقت جاننے کے لیے ہم نے تصویر کو گوگل ریورس امیج کے ذریعے سرچ کیا۔ اس دوران ہمیں اصل تصویر نیوز ویب سائٹ ٹائمز آف انڈیا کی ایک رپورٹ میں شائع ہوئی۔ اصل تصویر میں ہاردک پٹیل راہل گاندھی کے ساتھ کھڑے ہیں۔ 13 مارچ 2019 کو شائع ہونے والی اس رپورٹ کے مطابق یہ تصویر گاندھی نگر، گجرات میں ایک جلسہ عام کی ہے۔ ہمیں یہ اصل تصویر بہت سی دوسری نیوز ویب سائٹس پر بھی شائع ہوئی ہے۔

موصول ہونے والی معلومات کی بنیاد پر ہم نے گوگل پر کئی کی ورڈ کے ذریعے سرچ کرنا شروع کیا۔ اس دوران ہمیں 13 مارچ 2019 کو اے بی پی نیوز کے آفیشل یوٹیوب چینل پر اپ لوڈ کی گئی وائرل تصویر سے متعلق ایک ویڈیو رپورٹ ملی۔ ویڈیو میں دی گئی معلومات کے مطابق ہاردک پٹیل گاندھی نگر میں ایک جلسہ عام میں کانگریس میں شامل ہوئے تھے۔ اس جلسہ عام میں راہل گاندھی اور سونیا گاندھی بھی موجود تھیں۔ اصل تصویر صرف اس جلسہ عام کے دوران لی گئی ہے۔

دونوں تصویروں میں فرق یہاں دیکھا جا سکتا ہے۔

مزید تفصیلات کے لیے، ہم نے کانگریس گجرات کے ترجمان دیپم بھٹ سے رابطہ کیا۔ اس نے ہمیں بتایا، “وائرل دعویٰ غلط ہے۔ یہ تصویر ایڈٹ کر کے وائرل ہو رہی ہے۔ اپوزیشن پارٹیاں راہول گاندھی کی شبیہ کو خراب کرنا چاہتی ہیں۔

ہم نے مکمل تصدیق کے لیے گجرات دینک جاگرن کے صحافی شتروگھن کمار سے رابطہ کیا۔ اس نے بھی تصدیق کی کہ یہ تصویر ایڈٹ کی گئی ہے۔ ہمیں بتایا، “وائرل دعویٰ غلط ہے، لوگ اس ترمیم شدہ تصویر کو غلط تناظر میں شیئر کر رہے ہیں۔ ہاردک پٹیل اصل تصویر میں ہیں۔

وشواس نیوز نے تحقیقات کے آخری مرحلے میں وائرل پوسٹ کو شیئر کرنے والے پروفائل کا بیک گراؤنڈ چیک کیا۔ ہم نے پایا کہ صارف للولال یادو ایک نظریے سے متاثر ہے اور اس نے اپنے پروفائل پر زیادہ معلومات شیئر نہیں کیں۔

نتیجہ: وشواس نیوز کی جانچ میں وائرل دعویٰ جھوٹا نکلا۔ وائرل تصویر کو پروپیگنڈے کی نیت سے ایڈٹ کرکے شیئر کیا جارہا ہے۔ اصل تصویر میں ہاردک پٹیل راہل گاندھی کے ساتھ کھڑے ہیں۔

  • Claim Review : اصل بات یہ ہے کہ کچھ سمجھ لو
  • Claimed By : للولال یادو
  • Fact Check : جھوٹ‎
جھوٹ‎
فرضی خبروں کی نوعیت کو بتانے والے علامت
  • سچ
  • گمراہ کن
  • جھوٹ‎

مکمل حقیقت جانیں... کسی معلومات یا افواہ پر شک ہو تو ہمیں بتائیں

سب کو بتائیں، سچ جاننا آپ کا حق ہے۔ اگر آپ کو ایسے کسی بھی میسج یا افواہ پر شبہ ہے جس کا اثر معاشرے، ملک یا آپ پر ہو سکتا ہے تو ہمیں بتائیں۔ آپ نیچے دئے گئے کسی بھی ذرائع ابلاغ کے ذریعہ معلومات بھیج سکتے ہیں۔

ٹیگز

اپنی راے دیں
مزید پڑھ

No more pages to load

متعلقہ مضامین

Next pageNext pageNext page

Post saved! You can read it later