X

فیکٹ چیک: فرضی ہے نوپور شرما کی گرفتار کی خبر، وائرل ویڈیو راجستھان کی خاتون کا ہے

وشواس نیوز نے وائرل پوسٹ کی جانچ کی۔ دعویٰ جعلی نکلا۔ جس خاتون کا نام نوپور شرما بتایا جا رہا ہے وہ دراصل راجستھان کی کسان لیڈر بھومی برمی ہے۔ کچھ دن پہلے راجستھان کے چورو ضلع میں ایک احتجاج کے دوران پولیس کے ساتھ بدتمیزی کی گئی تھی۔ ویڈیو اسی واقعے کی ہے لیکن کچھ لوگ اسے نوپور شرما کے نام سے وائرل کر رہے ہیں۔

  • By Vishvas News
  • Updated: July 9, 2022

نئی دہلی (وشواس نیوز)۔ بی جے پی کی سابق ترجمان نوپور شرما کے متنازعہ بیان کے بعد سے ان کے بارے میں کئی طرح کی جعلی پوسٹیں سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں۔ اب سوشل میڈیا کے مختلف پلیٹ فارمز پر ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے۔ اس ویڈیو میں ایک خاتون کو دیکھا جا سکتا ہے۔ سوشل میڈیا صارفین اس ویڈیو کو نوپور شرما کی گرفتاری بتا کر وائرل کر رہے ہیں۔ وشواس نیوز نے وائرل پوسٹ کی جانچ کی۔ دعویٰ جعلی نکلا۔ جس خاتون کا نام نوپور شرما بتایا جا رہا ہے وہ دراصل راجستھان کی کسان لیڈر بھومی برمی ہے۔ کچھ دن پہلے راجستھان کے چورو ضلع میں ایک احتجاج کے دوران پولیس کے ساتھ بدتمیزی کی گئی تھی۔ ویڈیو اسی واقعے کی ہے لیکن کچھ لوگ اسے نوپور شرما کے نام سے وائرل کر رہے ہیں۔

کیا ہے وائرل پوسٹ میں؟

گزشتہ ماہ کی 20 جون کو ایک ویڈیو اپ لوڈ کرتے ہوئے، فیس بک صارف کوسین عالم نے لکھا: ‘نوپور شرما کو کیا ہوا ہے؟’

پوسٹ کے آرکائیو ورژن کو یہاں دیکھیں۔

پڑتال

وشواس نیوز نے گوگل سرچ کے ساتھ اپنی جانچ شروع کی۔ ہمیں ایک بھی ایسی خبر نہیں ملی جس سے نوپور شرما کی گرفتاری کی تصدیق ہو، جب کہ اگر نوپور شرما کو گرفتار کیا جاتا تو یہ بڑی خبر ہوتی۔ تحقیقات کو آگے بڑھاتے ہوئے وشواس نیوز نے وائرل ویڈیو کے اصل ماخذ کا پتہ لگانا شروع کر دیا۔ ہمیں اصل ویڈیو بھومی برمی نامی خاتون کے فیس بک اکاؤنٹ پر ملی۔ یہ 15 جون 2022 کو پوسٹ کیا گیا تھا۔ فوٹیج میں 1:08 منٹ کی ویڈیو بھی دیکھی جا سکتی ہے، جو نوپور شرما کے نام سے وائرل ہوئی تھی۔ اصل ویڈیو راجستھان میں کسانوں کی تحریک سے متعلق ہے۔ فصل بیمہ کے دعوے سمیت کئی مطالبات کو لے کر چورو کے ایس ڈی ایم دفتر کے سامنے یہ مظاہرہ ہوا۔ اس سے متعلق ویڈیوز یہاں اور یہاں دیکھی جا سکتی ہیں۔

تلاش کے دوران ہمیں فرسٹ انڈیا نیوز کے یوٹیوب چینل پر ایک خبر ملی۔ 16 جون کو اپ لوڈ کی گئی اس خبر میں بتایا گیا کہ راجستھان کے تارا نگر، چورو میں پولس کسانوں کے درمیان جھڑپیں، ایس ڈی ایم آفس کے سامنے مظاہرہ ہوا۔ اس خبر میں ہم نے وہ فوٹیج ایک اور زاویے سے بھی دیکھی، جو اب وائرل ہو رہی ہے۔

وشواس نیوز نے تحقیقات کے اگلے مرحلے کے لیے دہلی کے دینک جاگرن کے صحافی سنتوش کمار سنگھ سے رابطہ کیا۔ وائرل ویڈیو کو اس کے ساتھ شیئر کیا۔ معلومات دیتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ وائرل ویڈیو میں نظر آنے والی خاتون نوپور شرما نہیں ہیں۔ اس کی گرفتاری کی کوئی خبر نہیں ہے۔ مزید تصدیق کے لیے، وشواس نیوز نے بی جے پی لیڈر اور یوپی کے ترجمان اونیش تیاگی سے بھی بات کی۔ انہوں نے وائرل پوسٹ کو جعلی بھی قرار دیا۔

تحقیقات کے اختتام پر جعلی پوسٹ کرنے والے صارف سے تفتیش کی گئی۔ معلوم ہوا کہ فیس بک صارف کوسین عالم کو آٹھ لاکھ سے زیادہ لوگ فالو کرتے ہیں۔

نتیجہ: وشواس نیوز نے وائرل پوسٹ کی جانچ کی۔ دعویٰ جعلی نکلا۔ جس خاتون کا نام نوپور شرما بتایا جا رہا ہے وہ دراصل راجستھان کی کسان لیڈر بھومی برمی ہے۔ کچھ دن پہلے راجستھان کے چورو ضلع میں ایک احتجاج کے دوران پولیس کے ساتھ بدتمیزی کی گئی تھی۔ ویڈیو اسی واقعے کی ہے لیکن کچھ لوگ اسے نوپور شرما کے نام سے وائرل کر رہے ہیں۔

  • Claim Review : نوپور شرما کو کیا ہوا ہے
  • Claimed By : کوسین عالم
  • Fact Check : جھوٹ‎
جھوٹ‎
فرضی خبروں کی نوعیت کو بتانے والے علامت
  • سچ
  • گمراہ کن
  • جھوٹ‎

مکمل حقیقت جانیں... کسی معلومات یا افواہ پر شک ہو تو ہمیں بتائیں

سب کو بتائیں، سچ جاننا آپ کا حق ہے۔ اگر آپ کو ایسے کسی بھی میسج یا افواہ پر شبہ ہے جس کا اثر معاشرے، ملک یا آپ پر ہو سکتا ہے تو ہمیں بتائیں۔ آپ نیچے دئے گئے کسی بھی ذرائع ابلاغ کے ذریعہ معلومات بھیج سکتے ہیں۔

ٹیگز

اپنی راے دیں
مزید پڑھ

No more pages to load

متعلقہ مضامین

Next pageNext pageNext page

Post saved! You can read it later